Tumhen Kuch Yaad Hai Janaan || Best Poetry of Mehwish Hayat in College Function

Tumhen Kuch Yaad Hai Janaan || Best Poetry of Mehwish Hayat in College Function

September 1, 2019 2 By Stanley Isaacs


(موسیقی) اپنی ایک نظم سنا رہی ہوں آپ کو سنائیے پلیز، سنائیے! سنوا رہی ہے، سنوا رہی ہے تمہیں کچھ یاد ہے جاناں! وہ پچلی بارشوں میں ہم بڑھے نادان ہوتے تھے سبھوں کی آنکھوں سے بچ کر، پرانی قافیوں سے ہم ورق کچھ نوچ لیتے تھے ہم ایک کشتی بناتے تھے وہ پانی پر چلاتے تھے (کیا آواز ہے یار) ہمیں لگتا تھا جیسے ہم (چپ) اسی کشتی میں بیٹھے ہیں وہ کشتی پار جاتی تھی توہم بھی پار جاتے تھے وہ کشتی ڈوب جاتی تھی تو ہم بھی ڈوب جاتے تھے تمہیں کچھ یاد ہے جاناں!!! (تالیوں کی گونج)